Home / News / وفاق شہریوں سے 2 ماہ کے یوٹیلٹی بلز نہ لینے پر غور کرے، سندھ حکومت

وفاق شہریوں سے 2 ماہ کے یوٹیلٹی بلز نہ لینے پر غور کرے، سندھ حکومت

ملک میں کورونا وائرس کے پھیلاؤ کے پیش نظر حکومت سندھ نے وفاق سے شہریوں سے 2 ماہ کے بجلی اور گیس کے بل نہ لینے پر سنجیدگی سے غور کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔

صوبائی وزیر زراعت اسماعیل راہو نے اس ضمن میں کہا کہ وفاقی حکومت کو عوام سے 2 ماہ تک 300 یونٹ بجلی اور ایک ہزار روپے تک کے گیس بل وصول نہ کرنے کی اپیل کی ہے، شہری گھروں تک محدود ہیں اور تمام کاروبار بند ہے اسی لیے عوام کو ریلیف ملنا چاہیے، چھوٹے کاروباری، ملازمین اور دہاڑی مزدورکا گزر مشکل وقت سے ہورہا ہے، اس مشکل صورتحال سے صوبائی حکومت اپنے محدود وسائل سے نبرد آزما ہو رہی ہے۔

صوبائی وزیر نے کہا کہ خان صاحب بھلے سندھ کو کوئی فنڈ نہ دیں مگر عوام کو تو ریلیف دیں، وفاقی حکومت پنجاب، بلوچستان اور کے پی کے تک محدود نہ رہے، سندھ بھی ملک کا حصہ ہے۔

Check Also

سینیٹائزر کی ضرورت نہیں، عام صابن سے ہاتھ دھونا ہی کافی ہے، سائنسدان کا مشورہ

کورونا وائرس سے بچاؤ کےلیے عوام اس حد تک پاگل ہوچکے ہیں کہ ہینڈ سینیٹائزرز، …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *